پاکستان کی تاریخ میں پہلی بار ماہ عروج ساون میں ملک کے سب سے بڑے ڈیم “تربیلا ڈیم” میں پانی کی سطح ڈیڈ لیول کی تشویشناک حد تک پہنچ گئی

 

بالعموم مئی اور جون سال کے سب سے گرم اور خشک مہینے ہوتے ہیں جو شمالی پاکستان میں مغربی ہمالیہ گلیشیر کے پگھلنے کا باعث بنتا ہے جس سے پانی بلخصوص تربیلا ڈیم میں ذخیرہ ہو جاتا ہے نیز موسم سرما و گرما کی بارشیں بھی اپنا کردار ادا کرتی ہیں

6 - Tarbela Dam 1

مگر قدرت کے بر خلاف تیزی سے بدلتی ہوئی موسمیاتی حالت کے سبب حالیہ سال ماہ سرما میں ڈیم کے کیچمنٹ ایریا بارشیں معمول سے نہایت کم ریکارڈ کی گی جبکہ مغربی برکھائی نظام کی مئی اور جون جیسے گرم اور خشک مہینوں میں بھی حد درجہ پاکستان کے شمالی علاقہ جات میں رسائی نے اس سال گلیشیر کے پگھلنے کے عمل کو موقوف کر رکھا ہے- ان سب وجوہات کے باوجود اگر مون سون کی بارشیں اپنا کردار ادا کر رہی ہوتیں تو تربیلا سمیت دیگر ڈیموں میں بری کی قلّت اس حد تک نہ پہنچتی

A file photo of Tarbela dam at dead level. This is the first time in the dam’s history that it has touched dead level in July, which is a month of peak inflows.

 

اس وقت تربیلا میں پانی کی سطح 1,387 فیٹ تک گر چکی ہے جو کہ ڈیڈ لیول رینج میں آتی ہے- نہ صرف تربیلا بلکہ منگلا، جہلم، چناب، کابل، کالاباغ، تونسہ اور سکھر سے پانی کا اخراج حد درجہ کم ہے جو کہ ملک بھر میں پانی کی قلّت اور قحط سالی جیسی صورتحال کی جانب واضح اشارہ کر رہا ہے

15 - Tarbela Dam aerial view

مزید حب ڈیم اور رول ڈیم کو بھی پانی کی انتہائی قلّت کا سامنا ہے، اس سبب اس بات کا عندیہ ظاہر کیا جا رہا ہے کہ اس صورت حال میں پنجاب اور سندھ میں پانی کی فراہمی کم کردی گئی ہے جس سے کپاس اور گنے کی فصلوں کو خطرات لاحق ہیں

4 - Tarbela Dam

 

اگر آیندہ دس دنوں میں منگلا اور تربیلا کے کیچمنٹ ایریا میں بارشیں نہ ہوئی تو ملک میں قحط کے واضح امکانات ظاہر ہونا شرو ہو جائے جبکہ کراچی شہر میں پانی کی قلّت انتہائی درجہ پر پہنچ چکی ہے، کی علاقوں میں پانی کی فرتہمی معطل ہے- حالانکہ حب کیچمنٹ ایریا میں بارش کے خوش آیندہ امکانات کم از کم آیندہ چار سے پانچ دنوں تک بلکل نہیں ہیں- البتہ آج سے تربیلا اور منگلا ڈیم کے ایریا میں بارشوں کی نوید سنائی جاتی ہے لیکن حب ڈیم میوں پانی کی قلّت کا شدّت اختیار کر جانا ممکن ہے

Related image

 

ان موسمیاتی تبدیلیوں سے سب سے زیادہ خطرہ پاکستان کی زراعت کو ہے جبکہ شہری زندگی بھی منجمد ہو سکتی ہے؛ دیہاتی علاقے بھی اس مشکل سے دو چار ہیں- اس کا حل فقط ملک میں مزید ڈیم کا قیام ہے اور بارشوں کا وقت پر ہونا ہی اس کا حل- لہذا درخوست ہے کہ اپنے خداوند کریم کے حضور دعا استغاثہ بجا لی جائے اور رب عظیم سے اپنے گناہوں کی دل سے معافی طلب کرنے کے ساتھ اپنا سر خم تسلیم کرلیا جائے
پاکستان کے تمام ڈیم بشمول تربیلا ڈیم میں پانی ڈیڈ لیول تک پہنچ گیا
5 (100%) 13 votes
Haider Saqib

Posted by Haider Saqib

Leave a reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *